کیا آپ بھی کیلے کے چھلکے پھینک دیتے ہیں؟ تو یہ گھریلو ٹوٹکے جاننے کے بعد آپ انھیں کبھی نہیں پھینکیں گے

کیلا بچوں اور بڑوں دونوں کا ہی پسندیدہ پھل سمجھا جاتا ہے ۔ اور یہ ہر گھر میں ہی شوق سے کھائے جاتے ہیں مگر ہم کیلا کھانے کے بعد اس کے چھلکوں کو کچرے میں پھینک دیتے ہیں۔ لیکن آج ہم آپ کو اس کے چھلکے کے قیمتی فوائد بتاتے ہیں جس کے بعد آپ انہیں کبھی پھینگیں گے نہیں بلکہ اس کا استعمال بھی لازمی کرنے لگیں گے۔

جلد کی خارش

اکثر خواتین کی جلد پر خارش ہوجاتی ہے اور نشانات آنا شروع ہوجاتے ہیں۔اس صورت میں کیلے کا چھلکا استعمال کیا جاسکتا ہے۔ خارش سے نجات کے لیے کیلے کے چھلکے کو جلد پر رگڑیں۔

جوتے پالش

چونکہ کیلے میں بھاری مقدار میں پوٹاشیئم پایا جاتا ہے اس لیے آپ اس سے اپنے جوتے بھی چمکا سکتے ہیں کیونکہ جوتے کی پالش میں بھی پوٹاشیئم کا استعمال کیا جاتا ہے۔اس کے لیے کیلوں کے چھلکے کو جوتے پر رگڑیں پھر کسی نرم کپڑے سے صاف کرلیں یہ چمکنے کے ساتھ ساتھ پائیدار بھی ہوجائیں گے۔

دانت کو چمکائیں

کیلے کے چھلکوں کو دانتوں پر ملیں اور تھوڑی دیر بعد ٹوتھ پیسٹ سے برش کرلیں دانت چمک جائیں گے۔ کیلے میں موجود پوٹاشیئم دانتوں کے لیے بھی مفید ہوتا ہے۔

سر درد میں مفید

سر میں درد محسوس ہو تو کیلے کے چھلکوں کو ماتھے یا گردن پر تھوڑی دیر رکھیں جیسے بخار میں گیلا کپڑا رکھتے ہیں۔ ایسا کرنے سے سر درد میں آرام آجائے گا۔

Kele Ke Chilkon Ke Fayde

Discover a variety of Tips and Totkay articles on our page, including topics like Kele Ke Chilkon Ke Fayde and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Kele Ke Chilkon Ke Fayde to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Shahzad  |   In Tips and Totkay  |   0 Comments   |   4538 Views   |   24 Apr 2021

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. KFoods.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.

About the Author:

Shahzad is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Shahzad is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 19 July 2024)

کیا آپ بھی کیلے کے چھلکے پھینک دیتے ہیں؟ تو یہ گھریلو ٹوٹکے جاننے کے بعد آپ انھیں کبھی نہیں پھینکیں گے

کیا آپ بھی کیلے کے چھلکے پھینک دیتے ہیں؟ تو یہ گھریلو ٹوٹکے جاننے کے بعد آپ انھیں کبھی نہیں پھینکیں گے ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ کیا آپ بھی کیلے کے چھلکے پھینک دیتے ہیں؟ تو یہ گھریلو ٹوٹکے جاننے کے بعد آپ انھیں کبھی نہیں پھینکیں گے سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔