کیا آپ کے گھر میں بھی فلٹر والا پانی استعمال ہوتا ہے؟ فلٹر شدہ پانی یا ابلا ہوا پانی، کون سا بہترہے؟

کون سا پانی پینا محفوظ ہے؟

پانی ہماری زندگی کے لیے ضروری ہے۔ پانی زندگی ہے لیکن آبادی کے بوجھ ، ماحولیاتی آلودگی اور قدرتی وسائل کی کمی کے باعث صاف پانی کا حصول ایک چیلنج بن گیا ہے۔ ان لوگوں کے لیے جو اس کی استطاعت رکھتے ہیں، بازار ہرطرح کے فلٹرزسے بھرا ہوا ہے یا زیادہ تر گھروں میں منرل واٹریا جگہ جگہ موجود واٹر فلٹریشن پلانٹ لگے ہیں جہاں سے سستا فلٹر کیا ہوا پانی مل جاتا ہے اور جو نہیں کر سکتے، ان کے لیے استعمال کرنے سے پہلے نل کے پانی کو ابالنے کی سفارش کی جاتی ہے۔ لیکن پانی کی صفائی کو یقینی بنانے کا ایک بہتر طریقہ کون سا ہے؟ یہاں تک کہ ڈاکٹر بھی پانی سے پیدا ہونے والی بیماریوں جیسے یرقان، ٹائیفائیڈ اور اسہال سے بچنے کے لیے ابلا ہوا پانی پینے کا مشورہ دیتے ہیں۔ لیکن، پھر اس سے ہمیں فلٹر شدہ پانی کی ضرورت پرسوال پیدا ہوتا ہے اور جب ڈاکٹروں کے ذریعہ ابلا ہوا پانی تجویز کیا جاتا ہے تو یہ ہمارے لیے کس طرح مفید ہے۔ یہاں دونوں ہم دونوں پانیوں کا تفصیلی تجزیہ دے رہے ہیں کہ کون سا زیادہ مفید ہے۔

کیا نل کا پانی پینا ٹھیک ہے؟

اگر آپ کو لگتا ہے کہ نل سے نکلنے والا پانی پینے کے لیے صحت بخش ہے، تو دوبارہ سوچیں! واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ سے پانی کا سفر محفوظ اور بیکٹیریا اور آلودگی سے پاک سمجھا جاتا ہے کیونکہ وہ بیکٹیریا کو مارنے کے لیے کلورین اور فلورائیڈ کا استعمال کرتے ہیں۔ تاہم، جن پائپوں کے ذریعے یہ بہتا ہے اور ہمارے گھر تک پہنچتا ہے وہ صاف نہیں ہو سکتا اور جب اسے اسٹوریج اور ٹریٹمنٹ پلانٹس میں جمع کیا جاتا ہے تو پانی اس عمل میں زیادہ آلودگیوں کو اپنے اندر شامل کر سکتا ہے۔ لہذا، اگر آپ کو لگتا ہے کہ نل سے نکلنے والا پانی خالص ہے تو آپ یہ ضرور پڑھیں۔

ابلتا ہوا پانی کیوں ضروری ہے؟

پانی کو ابالنا پینے کا صاف پانی حاصل کرنے کے قدیم ترین طریقوں میں سے ایک ہے اور یہ گھریلو پانی کی صفائی کا ایک وسیع پیمانے پر استعمال کیا جانے والا طریقہ ہے۔ پانی کو ابالنے کا بنیادی مقصد اس میں موجود جراثیم کو مارنا ہے۔ تاہم، پانی کو ابالنا ایک وقتی حل ہے۔ اس کے علاوہ، پانی صاف کرنے کے دیگر طریقے بھی دستیاب ہیں جو زیادہ موثر،اور آسان ہیں۔ جب پانی کو ابالا جاتا ہے، تو یہ ان مائکروآرگنزم کو دور کرنے میں مدد کرتا ہے جو زیادہ درجہ حرارت برداشت نہیں کر سکتے۔ لیکن، اگر آپ سوچتے ہیں کہ ابلنے کے بعد نجاست اور دیگر کیمیکلز ختم ہو جاتے ہیں، تو آپ غلط ہیں! ان پوشیدہ پانی سے پیدا ہونے والے وائرس اور بیکٹیریا کو جراثیم سے پاک کرنے کے لیے، اس بات کو یقینی بنائیں کہ پانی کو کم از کم 20 منٹ تک مسلسل ابالیں۔ اگر آپ اسے اس سے کم ابالیں تو پانی پینے کے لیے محفوظ نہیں ہے۔

فلٹر شدہ پانی کیا پینے کے لئے اچھا ہے؟

ابلے ہوئے پانی کے مقابلے میں صاف پانی پینے کے لیے زیادہ محفوظ سمجھا جاتا ہے۔ ایک واٹر پیوریفائر آلودہ یا نل کے پانی سے گندگی، کیمیکلز اورمائکروآرگنزم کو دور کرنے میں مدد کر سکتا ہے جبکہ اسےآلودگی سے پاک بھی بناتا ہے۔ (یو وی) سے لے کر(آراو) واٹر پیوریفائر تک، ایسی کئی ٹیکنالوجیزہیں جو پانی کو صاف کرنے اور اسے پینے کے قابل بنانے میں مدد کرتی ہیں۔ یہ بوتل کے پانی پر انحصار کو بھی کم کرتا ہے۔

صاف پانی پینا کیوں ضروری ہے؟

صاف پانی پینا صحت مند مدافعتی نظام کو فروغ دینے میں مددگار ہے کیونکہ وہاں تمام ضروری معدنیات اور وٹامنز موجود ہوتے ہیں۔ یہ میٹابولزم اور جلد کی صحت کو بڑھاتے ہوئے وزن کم کرنے کے عمل میں بھی مدد کرتا ہے۔

غیر فلٹر شدہ پانی کے مضر اثرات:

مطالعے اور تحقیق کے مطابق، غیر فلٹر شدہ پانی یا غیرصاف شدہ پانی خطرناک مائکرواورگنزم سے بھرا ہو سکتا ہے، یہ بھی پتہ چلا ہے کہ یہ خطرناک مائکرواورگنزم مضر صحت مسائل کا باعث بن سکتے ہیں، جیسے اسہال، پیچش، ہیضہ، اور ممکنہ طور پر موت ۔

By Afshan    |    In Health and Fitness   |    0 Comments    |    1001 Views    |    16 Aug 2022

Comments/Ask Question

Read Blog about کیا آپ کے گھر میں بھی فلٹر والا پانی استعمال ہوتا ہے؟ فلٹر شدہ پانی یا ابلا ہوا پانی، کون سا بہترہے؟ and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (کیا آپ کے گھر میں بھی فلٹر والا پانی استعمال ہوتا ہے؟ فلٹر شدہ پانی یا ابلا ہوا پانی، کون سا بہترہے؟) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.