سردیوں میں شکر قندی کھانے سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے

شکر قندی ایک مشہور جڑ ہے ۔ ہندوستان اور پاکستان میں ہر جگہ بکثرت پیدا ہوتی ہے ۔ اگر چہ یہ کھانے میں لذیذ ہوتی ہے اور قابل قدر غذائیت رکھتی ہے لیکن قیمت کے اعتبار سے سستی ہوتی ہے ۔ اس لئے امیر لوگ اس کی طرف بہت کم رغبت کرتے ہیں ۔ البتہ غریب لوگ نہایت شوق اور رغبت سے کھاتے ہیں ۔

بظاہر نشاستہ اور شکر کا مجموعی ہے ۔ درحقیقت یہ چیزیں شکر قندی کا جزو اعظم ہیں لیکن اس میں دوسرے لطیف اجزاء بھی پائے جاتے ہیں ۔ چنانچہ اس میں وٹامن اے کافی مقدار میں ہوتے ہیں نیز فولاد اور بعض دیگر معدنی اجزاء بھی کیمیاوی تجربہ کرنے پر اس میں ملتے ہیں ۔ لہذا شکر قندی بدن کو تغذیہ اور توانائی بخشنے والے غذائی اجزاء کا مجموعہ ہے ۔ غذائیت کے لحاظ سے آلو پر فوقیت رکھتی ہے ۔

شکر قندی کو بھون کر بھی کھاتے ہیں جس کا طریقہ یہ ہے کہ شکرقندی کو نہایت گرم ریت میں یا گرم راکھ میں دبا دیتے ہیں ۔ جب شکر قندی پک جاتی ہے تو نکال لیتے ہیں چھیل کر کھاتے ہیں ۔ اس میں شک نہیں کہ اس طرح بھونی شکر قندنسبتاً زیادہ لذیذ ہوتی ہے ۔ البتہ اُبالنے کے مقابلے میں اس طرح بھوننے میں زیادہ تکلیف کرنا پرتی ہے جو ہر گھر میں آسانی سے نہیں ہو سکتا ۔

شکر قندی کا مفید و مزیدار حلوہ :
بعض لوگ شکر قندی کا حلوہ بنا کر بھی کھاتے ہیں ۔ یہ حلوہ بدن کو تغذیہ اور تقویت بخشتا ہے ۔

شکر قندی کا حلوہ بنانے کا طریقہ :
شکر قندی کا باریک باریک تراش کر خشک کرلیں ، اس کے بعد کوٹ چھان کر آٹا بنائیں ، روزانہ صبح کے وقت ایک چھٹانک یہ آٹا لے کر ایک چھٹانک دیسی گھی میں بھونیں اور تین چھٹانک چینی کا قوام شامل کرکے حلوہ تیار کریں ۔
اگر چاہیں تو اسمیں مغز بادام، مغز پستہ اور ناریل باریک باریک تراش کر شامل کریں ۔

سردیوں میں کھانے سے درج ذیل فوائد حاصل کرسکتے ہیں ۔
۱۔ دماغ کو طاقت دیتی ہے ۔
۲۔ جسم کو موٹا کرتی ہے ۔
۳۔ قوت باہ مضبوط کرتی ہے ، بشرطیکہ چینی ملا کر کھائی جائے ۔
۴۔ جریان کے لئے بے حد مفیدہے ۔
۵۔ اس کا حلوہ بنا کر کھانا اکسیر کا درجہ رکھتا ہے ۔
۶۔ کپکپی اور دانت بجنے سے آرام پہنچاتا ہے ۔

شکر قندی کے نقصانا ت :
۱۔ قابض ہے اس لئے کمزور معدے والے احباب اجتناب کریں ۔
۲۔ پیٹ میں بعض دفعہ اپھارہ پیدا کرتی ہے ۔
۳۔ جسم کو موٹا کرتی ہے ، کرسی پر بیٹھ کر کام کرنے والوں کے لئے مناسب نہیں ۔
۴۔ یہ دیر ہضم ہے ، البتہ اگر چینی یا شہد ملا کر کھائی جائے تو پھر اس کی یہ خاصیت ختم ہوجاتی ہے ۔

احتیاط :
ذیابیطس کے مریض شکر قندی استعمال نہ کریں ۔
دل کے مریض بھی اسے استعمال نہ کریں ۔
شکر قندی استعمال کرنے کے بعد تھوڑی سونف چبالینے سے اس کے مضر اثرات دور ہوجاتے ہیں ۔

Shakar Qandi Ke Fawaid In Urdu

Discover a variety of Health and Fitness articles on our page, including topics like Shakar Qandi Ke Fawaid In Urdu and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Shakar Qandi Ke Fawaid In Urdu to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Aqib Shahzad  |   In Health and Fitness  |   0 Comments   |   5271 Views   |   12 Jan 2021
About the Author:

Aqib Shahzad is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Aqib Shahzad is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 24 May 2024)

سردیوں میں شکر قندی کھانے سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے

سردیوں میں شکر قندی کھانے سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ سردیوں میں شکر قندی کھانے سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔