کیا آپ جانتے ہیں کہ مردوں میں موٹاپا انہیں کونسے جان لیوا مرض کا شکار بنا رہا ہے؟

ایک نئی تحقیق کے مطابق مردوں میں زیادہ موٹاپے کی وجہ سے پروسٹیٹ کینسر سے سیکڑوں جانیں ضائع ہو رہی ہیں۔ محققین کا دعویٰ ہے کہ برطانیہ میں ہر سال پروسٹیٹ کینسر سے ہونے والی 1300 سے زیادہ اموات کو ممکنہ طور پر روکا جا سکتا ہے اگر اوسط آدمی کا وزن زیادہ نہ ہو۔

موٹاپا

موٹاپا انسانی جسم کی ایک طبی حالت ہے جس میں انسانی جسم پر چربی چڑھ جاتی ہے اور انسان کا وزن زیادہ ہو جاتا ہے اور توند نکل آتی ہے۔موٹاپا خود ایک بیماری ہے بسااوقات کئی بیماریوں کا باعث بھی بن جاتا ہے اور بعض اوقات موت کا سبب بھی بن سکتا ہے۔
موٹاپے کی وجہ سے انسانی جسم میں شوگر، ہائی بلڈپریشر، امراضِ قلب، یورک ایسڈ، فالج، پتے کی پتھری، کمر اور جوڑوں اور پروسٹیٹ کینسر کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

پروسٹیٹ کینسر

طبی ماہرین کے مطابق پروسٹیٹ یعنی مثانے کے غدود کا سرطان سست رفتاری سے بڑھتا ہے جس کی وجہ سے مریض کو ابتدائی مراحل میں علامات محسوس نہیں ہوتی ہیں۔ یہ کیفیت برسوں تک جاری رہتی ہے، اس کا پہلا اثر پیشاب کرنے کے عمل پر ظاہر ہوتا ہے۔
پروسٹیٹ سے مثانے سے پیشاب باہر نکالنے والی نالی پر دباؤ آتا ہے جس سے پیشاب کے وقت پٹھوں پر شدید بوجھ پڑتا ہے۔ مریض کو مثانے کے مکمل طور پر خالی نہ ہونے کا احساس ہوتا ہے اور پیشاب میں خون بھی ظاہر ہوتا ہے۔

موٹاپا اور پروسٹیٹ کینسر

ویسے تو موٹاپا کئی بیماریوں کا سبب بنتا ہے لیکن حال ہی میں ہونیوالی تحقیق کے مطابق ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ موٹاپے کے باعث مردوں کو پروسٹیٹ کینسر ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔
اس سے قبل کینسر کی بہت سے اقسام کے بارے میں کہا جاتا رہا ہے کہ یہ موٹاپے کی وجہ سے ہوتے ہیں جس میں چھاتی کا کینسر بھی شامل ہے لیکن اب پہلی بار تحقیق کے نتیجے میں موٹاپے کے باعث پروسٹیٹ کینسر ہونے کے واضح ثبوت سامنے آئے ہیں۔
نئی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ چکنے خلیے پروٹین خارج کرتے ہیں جس کے باعث چوہوں میں پروسٹیٹ کینسر تیزی سے پھیلتا ہے جب کہ انسانی چکنے خلیے بھی پروٹین خارج کرتے ہیں جو اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ مردوں میں پروسٹیٹ کینسر موٹاپے کی وجہ سے ہونے کا زیادہ امکان ہوتا ہے۔ محققین نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ کینسر کے پھیلاؤ کو روکنے والی ادویات مردوں میں اس کینسر کے پھیلاؤ سے قبل اسے روکنے میں مددگار ثابت ہوں گی۔
تحقیق کے مطابق برطانیہ میں 8 میں سے ایک مرد پروسٹیٹ کینسر کے مرض میں مبتلا ہوتا ہے اور ہر سال 10 ہزار مرد پروسٹیٹ کینسر سے اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں ۔
ماہرین کا کہنا ہے کہ مردوں کو موجودہ سنگین اعدادوشمار کو کم کرنے کے لیے اپنے باڈی ماس انڈیکس اسکور (بی ایم آئی) سے صرف پانچ پوائنٹس ختم کرنے کی ضرورت ہے اور اگر اس مرض کی تشخیص جلد کرلی جائے تو زندگی بچ جانے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں لیکن اگر اس خاموش قتل سے بے خبر رہیں تو یہ اموات میں کئی گنا اضافے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔

By Musaddiq    |    In Health and Fitness   |    0 Comments    |    354 Views    |    03 Sep 2022

Related Articles

Comments/Ask Question

Read Blog about کیا آپ جانتے ہیں کہ مردوں میں موٹاپا انہیں کونسے جان لیوا مرض کا شکار بنا رہا ہے؟ and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (کیا آپ جانتے ہیں کہ مردوں میں موٹاپا انہیں کونسے جان لیوا مرض کا شکار بنا رہا ہے؟) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.