حاملہ خواتین کے لیے شہد کے زائد استعمال کے مضر اثرات کے بارے میں اہم ترین معلومات اور کچھ حقائق

بچے کی پیدائش ہر خاندان کے لئے ایک بہت بڑا خوشی کا موقع ہوتا ہے، خاص کر جب پہلا بچہ ہو تواحتیاطیں بہت زیادہ کروائی جاتی ہیں، ایسے میں حاملہ خاتون کے کھانے پینے پر خصوصی سب کی نظر ہوتی ہے کہ کچھ ایسا نہ کھالیا جائے جس سے ہونے والے بچے کی صحت پر کچھ غلط اثرات مرتب ہوں۔ یوں تو شہد ایک مفید دوا اور غذا ہے لیکن چونکہ اس کی تاثیر گرم ہوتی ہے اس لئے اس کا مسلسل استعمال حاملہ خاتون کے لئے مشکل پیدا کر سکتا ہے۔ اسی حوالے سے ہم یہاں کچھ ایسی معلومات لائے ہیں جنہیں جان کر یقیناً آپ کو اور آپ کے جاننے والوں کو فائدہ ہو گا۔ حاملہ خواتین کے لئے شہد کا زیادہ استعمال نقصان اور درج ذیل مضر اثرات کا سبب بن سکتا ہے۔

1۔ ہائی انسولین لیول

بہت زیادہ شہد کھانے سے جسم میں انسولین کی سطح بڑھ جاتی ہے، کیونکہ یہ خون میں شوگر کی سطح کو بڑھاتا ہے اور انسولین کے خلاف مزاحمت کو بڑھاتا ہے، جس کا مطلب ہے کہ یہ حمل کے دوران ذیابیطس کے زیادہ خطرے کا باعث بن سکتا ہے۔ واضح رہے کہ ایک کھانے کا چمچ شہد میں تقریباً 64 کیلوریززیادہ تر اس میں موجود مٹھاس(شکر) کی وجہ سے ہے۔

2۔ آنتوں کے درد کا بڑھتا ہوا خطرہ

جیسا کہ ذکر کیا گیا ہے، شہد میں شکر کا ایک گروپ ہوتا ہے، بشمول فرکٹوز، جو نظام انہضام کے مسائل جیسے کہ آنتوں کے درد، اپھارہ اور اسہال کا سبب بن سکتا ہے۔ یہ حاملہ خاتون کو تکلیف اور نقصان پہنچا سکتا ہے۔

3۔ دانتوں کے مسائل

یہ تو معلوم ہے کہ بہت زیادہ شکر کھانے سے دانتوں کے مسائل جیسے کیویٹیز اورکیڑا وغیرہ لگ سکتا ہے، اس لیے حاملہ خواتین کے لیے شہد کا ایک نقصان یہ ہے کہ یہ دانتوں کے مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔

4۔ وزن میں اضافہ

شہد کا زیادہ استعمال اس میں موجود کیلوریز کی کل تعداد کی وجہ سے وزن میں اضافے کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔ اور وزن کا زیادہ بڑھنا پیدائش میں تکلیف کا سبب بن سکتا ہے۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ شہد کے ہر ایک چمچ میں ایک کھانے کے چمچ ریفائنڈ چینی سے زیادہ کیلوریز ہوتی ہیں؟

حمل کے دوران شہد کے کچھ فوائد

حاملہ خواتین کے لیے شہد کے نقصانات کے بارے میں جاننے کے بعد، حمل کے دوران اس کے استعمال سے متعلق فوائد :

مدافعتی نظام کو مضبوط بناتا ہے

یہ معلوم ہے کہ حمل کے دوران مدافعتی نظام کی کام کرنے کی صلاحیت کم ہو جاتی ہے، اس لیے شہد کھانے سے شہد کی مخصوص خصوصیات کی وجہ سے اس کے کام میں بہتری آئے گی، جس میں یہ حقیقت بھی شامل ہے کہ یہ اینٹی بیکٹیریل اور اینٹی آکسیڈنٹ ہے۔

بے خوابی کے علاج میں مدد کرتا ہے

حاملہ خواتین کو سونے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے لیکن یہ پتہ چلا کہ شہد میں ایسی خصوصیات ہیں جو بے خوابی سے نجات دلاتی ہیں۔ لہذا، اگر آپ کو حمل کے دوران سونے میں دشواری ہوتی ہے، تو آپ سونے سے پہلے شہد کے ساتھ نیم گرم دودھ لے سکتے ہیں۔

کھانسی اور زکام کو دور کرتا ہے

یہ خیال کیا جاتا ہے کہ شہد جسم میں وائرل ہونے والی سرگرمی کو دباتا ہے اور نزلہ زکام سے بچاتا ہے، اس طرح کھانسی سے نجات ملتی ہے۔

الرجی کو روکتا ہے

شہد کو باقاعدگی سے کھانے سے موسمی الرجی کے خلاف جسم کی قوت مدافعت بڑھانے میں مدد ملتی ہے تاہم اگر آپ کو پولن سے الرجی ہے تو شہد کھانے سے پہلے اپنے ڈاکٹر سے ضرور مشورہ کریں۔

پیٹ کے السر کے علاج میں مدد کرتا ہے

شہد کا باقاعدہ استعمال پیٹ کے السر کی پریشان کن علامات کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔

By Afshan    |    In Health and Fitness   |    0 Comments    |    231 Views    |    23 Jun 2022

Related Articles

Comments/Ask Question

Read Blog about حاملہ خواتین کے لیے شہد کے زائد استعمال کے مضر اثرات کے بارے میں اہم ترین معلومات اور کچھ حقائق and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (حاملہ خواتین کے لیے شہد کے زائد استعمال کے مضر اثرات کے بارے میں اہم ترین معلومات اور کچھ حقائق ) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.