کیا آپ بھی بچہ ضائع ہوجانے کے صدمے سے گزری ہیں تو جانئے کہ صحت کے حوالے سے کتنے عرصے میں دوبارہ حمل ٹہرنا محفوظ ہو سکتا ہے؟

اسقاطِ حمل یا ابارشن عورت کے لئے بہت بڑا جسمانی اورجذباتی دھچکا ہوتا ہے، اس سے نکلنے کے لئے عورت اور مرد دونوں کو تھوڑا سا وقت چاہیے ہوتا ہے۔ دوبارہ اپنے معمولات پر آنے کے لئے کچھ محنت کرنا ہوتی ہے خاص کر عورت کیونکہ ایک جسمانی اور ذہنی تکلیف سے گزرتی ہے تو اس سے پیار محبت سے ڈیل کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔

جسمانی بحالی کا عمل:

اسقاط حمل کے جسمانی اثرات اس بات پر منحصر ہو سکتے ہیں کہ آپ کاابارشن کس نوعیت کا تھا اورآپ کو کسی قسم کی پیچیدگیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو اسے ٹھیک ہونے میں زیادہ وقت بھی لگ سکتا ہے زیادہ تر معاملات میں آپ کو چند ہفتوں کا وقت لگ سکتا ہے۔
آپ اسقاط حمل کی جراحی کے خاتمے کے چند گھنٹوں کے اندر ہسپتال چھوڑنے کے قابل ہو جاتے ہیں تاہم آپ کو اگلے دو ہفتوں میں کچھ جسمانی علامات ظاہر ہو سکتی ہے۔
تقریباً 1-2 ہفتوں تک خون کا بہنا یہ پہلے چند دنوں کے دوران سب سے زیادہ بھاری ہوتا ہے لیکن اس کے بعد ہلکا پھلکا ہوسکتا ہے۔ ختم ہونے کے بعد کچھ دنوں تک آپ کمزوری محسوس کر سکتی ہیں پہلے دو دنوں میں اثرات سب سے زیادہ ہوں گے اس لیے گھر پر آرام کرنا ضروری ہے۔
تقریبا 1 ہفتے کے لئے یہ درد ماہواری کے درد کی طرح محسوس کریں گے اور اسی طرح ان کا انتظام کیا جانا چاہئے آئبوپروفین یا پیراسیٹامول استعمال کرنی چاہیے لیکن اسپرین نہ لیں کیونکہ یہ خون کے جمنے کو متاثر کر سکتی ہے اگر درد کم کرنے والی دوائیں مدد نہیں کرتی ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔
آپ کو اپنی معمول کی زیادہ تر سرگرمیاں چند دنوں میں کرنے کے قابل ہو جانا چاہیے لیکن اگر آپ اب بھی درد یا تھکاوٹ محسوس کرتے ہیں تو سخت سرگرمیوں سے پرہیز کریں تاکہ آپ کے جسم کو صحت یاب ہوسکے۔
اگر آپ کو ابارشن کے بعد کوئی غیر معمولی چیز نظر آتی ہے تواپنے ڈاکٹر سے رابطہ کریں ممکنہ علامات میں بخار، شدید درد، اور بھاری خون کا بہاؤ شامل ہو سکتے ہیں۔اس کے علاوہ کچھ ہے تو ڈاکٹر سے رابطے کی ضرورت ہے۔
جذباتی اثرات کو سنبھالنے کے لیے کسی کی مدد ضروری ہے خاص طور پر اگر آپ کو ان سے مقابلہ کرنے میں دشواری ہو رہی ہو یا آپ کو لگتا ہے کہ آپ کی دماغی صحت کی حالت ٹھیک نہں ہے تو ایسے میں اپنی ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔

اسقاطِ حمل کے بعد اذدواجی تعلقات اورحمل ٹہرنا:

اگر آپ حمل یا خاندان کے کسی رکن کو کھونے جیسے تجربے سے گزر رہے ہوں تو منفی خیالات آتے ہیں اوراکثرطویل عرصے تک رہتے ہیں، بعض صورتوں میں ابارشن ڈپریشن یا دماغی صحت کے دیگر عوارض کو بھی متحرک کر سکتا ہے۔
ابارشن کے بعد معمول پر آنے کا ایک اور اہم حصہ آپ کی جنسی زندگی ہے، اسقاط حمل کے ذہنی اور جسمانی دونوں اثرات آپ کے جنسی تعلقات کو متاثرکرسکتے ہیں اور آپ کو تکلیف ہو سکتی ہے۔
ریلیف،اداسی،خالی پن یا نقصان کا احساس،جرم،غصہ کرنا یا اپنے آپ کو یا اپنے ساتھی پر الزام لگانا۔ یہ صورتحال بھی اکثر درپیش ہو سکتی ہے۔
جسمانی اثرات ختم ہونے کے بعد بھی آپ جذباتی طورپرفوراً دوبارہ جنسی تعلقات کے لیے تیار نہیں ہوسکتے یہ ضروری ہے کہ جب تک آپ کو ضرورت ہو انتظار کریں اس کے بعد بھی آپ تھوڑا سا مختلف محسوس کر سکتے ہیں اسقاط حمل کے چند ہفتوں بعد یا کم از کم اس وقت تک جنسی تعلقات سے پرہیز کریں جب تک کہ خون آنا بند نہ ہوجائے۔
اگر آپ جسمانی اور جذباتی طور پر تیار نہیں تو جلدی نہ کریں اگر آپ کا جسم اب بھی اچھا محسوس نہیں کر رہا یا آپ جنسی تعلقات کے لیے تیار نہیں تو انتظار کرنا ٹھیک ہے۔ کم از کم دو ہفتے انتظار کرنا ضروری ہے اس بات کو یقینی بنائیں کہ شروع میں تھوڑا احتیاط کریں کیونکہ آپ اسقاط حمل کے فوراً بعد حاملہ ہو سکتی ہے۔
اگر بچے کے ضائع ہونے کے بعد دوبارہ حمل کے لئے چند مہینے انتظار کر لیا جائے تو بہتر ہے تا کہ اس عرصے میں عورت کی جسمانی صحت اور طاقت واپس بحال ہو سکے۔

Abortion Ke Baad Sadma

Discover a variety of Health and Fitness articles on our page, including topics like Abortion Ke Baad Sadma and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Abortion Ke Baad Sadma to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Afshan  |   In Health and Fitness  |   0 Comments   |   2905 Views   |   28 Feb 2022
About the Author:

Afshan is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Afshan is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 22 May 2024)

کیا آپ بھی بچہ ضائع ہوجانے کے صدمے سے گزری ہیں تو جانئے کہ صحت کے حوالے سے کتنے عرصے میں دوبارہ حمل ٹہرنا محفوظ ہو سکتا ہے؟

کیا آپ بھی بچہ ضائع ہوجانے کے صدمے سے گزری ہیں تو جانئے کہ صحت کے حوالے سے کتنے عرصے میں دوبارہ حمل ٹہرنا محفوظ ہو سکتا ہے؟ ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ کیا آپ بھی بچہ ضائع ہوجانے کے صدمے سے گزری ہیں تو جانئے کہ صحت کے حوالے سے کتنے عرصے میں دوبارہ حمل ٹہرنا محفوظ ہو سکتا ہے؟ سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔