بدنامی کے ڈر سے سگی اولاد کو اسپتال چھوڑ آئے ۔۔ بے حس والدین کے بعد بوڑھی خاتون نے کیسے دو سر والے بچوں کی پرورش کی؟ دیکھیے

کئی ایسے انسان اسی دنیا کا حصہ ہیں، جو کہ اپنے حالات کی بنا پر سب کی توجہ حاصل کر لیتے ہیں۔
ایک ایسے ہی کہانی کے بارے میں بتائیں گے جس نے سب کو افسردہ کر دیا۔

بھارتی پنجاب سے تعلق رکھنے والے سوہنا سنگھ اور موہنا سنگھ اس وقت مشہور ہو گئے تھے جب انہیں ان کی منفرد اور مختلف جسامت کی وجہ سے اور دو دھڑ کی وجہ سے پجاب حکومت سے نوکری دی تھی۔

سوہنا سنگھ اور موہنا کے کا نچلا حصہ ایک ہی ہے یعنی دو دھڑ والے ان بھائیوں نے اپنی زندگی میں وہ مشکلات دیکھی ہیں جو کہ ایک عام انسان کے لیے تکلیف کا باعث ہوتی ہیں۔ سوہنا سنگھ اور موہنا سنگھ کی پیدائش کے وقت والدین بیٹوں کے دو دھڑ ہونے کی وجہ سے اسپتال چھوڑ کر ہی بھاگ گئے تھے، یوں نومولود بچوں کو اس طرح اکیلا چھوڑ کر والدین اسی لیے گئے تھے کہ بچے ان کے لیے کسی کام کے نہیں تھے اور سماج میں رسوائی کا باعث الگ۔

دوسری جانب سوہنا سنگھ اور موہنا سنگھ کو غیر سرکاری ادارے جو کہ انسانیت کے حوالے سے کام کرتا ہے، نے گود لے لیا۔

پنگلوارہ چیریٹیبل سوسائٹی کی سربراہ ڈاکٹر اندرجیت کور کہتی ہیں کہ جب یہ دو ماہ کے تھے، تب اس ادارے میں لائے گئے تھے۔ وہ کہتی ہیں کہ ان بچوں کی دیکھ بھال ان کے بنائے گئے قوانین کے تحت کی جا رہی ہے۔

دوسری جانب وہ یہ بھی بتاتی ہیں کہ ان بچوں کی کفالت کی ذمہ داری کئی تنظیمیں لینا چاہ رہی تھیں، جس میں سرکس والے بھی شامل تھے۔ لیکن ان کی دیکھ بھال کے لیے ہمیں دیا گیا اور پھر جوانی کے وقت انہیں بالغوں کے ہاسٹل بھیج دیا گیا۔ ڈاکٹر اندرا کور بتاتی ہیں کہ بچوں کو الیکٹرک کے کام میں کافی دلچسپی تھی۔ اسی لیے ہم نے انہیں ڈپلومہ کرانے کا فیصلہ کیا تھا۔ ان بچوں کا حوصلہ اتنا بڑھ گیا تھا کہ یہ کسی سے بھی بات کر سکتے تھے۔

دونوں بھائیوں کی جانب سے پنجاب حکومت سے اپیل کی گئی تھی جس پر حکومت نے انہیں سرکاری نوکری دے دی، پاور کارپوریشن لمیٹڈ کمپنی میں سپروائزر کے طور پر کام کر رہے ہیں جہاں انہیں لاگ شیٹ سنبھالنا، اور دیگر چھوٹے موٹے کام کرنا ہوتا ہے۔

دونوں بھائیوں کی تنخواہ 20 ہزار بھارتی روپے ہیں۔ بی بی سی سے انٹرویو میں دونوں بھائیوں کا کہنا تھا کہ ہم کوئی الگ قسم کے انسان نہیں ہیں، بلکہ ایک جیسے ہی ہیں۔ مقامی اسکول سے میٹرک کرنے والے دونوں بھائیوں نے الیکٹرک کالج سے ڈپلومہ حاصل کیا تھا۔

By Fahad  |   In News  |   0 Comments   |   1150 Views   |   10 Nov 2022
Related Articles
Top Trending
Comments/Ask Question

Read Blog about بدنامی کے ڈر سے سگی اولاد کو اسپتال چھوڑ آئے ۔۔ بے حس والدین کے بعد بوڑھی خاتون نے کیسے دو سر والے بچوں کی پرورش کی؟ دیکھیے and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (بدنامی کے ڈر سے سگی اولاد کو اسپتال چھوڑ آئے ۔۔ بے حس والدین کے بعد بوڑھی خاتون نے کیسے دو سر والے بچوں کی پرورش کی؟ دیکھیے) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.