بالوں میں خشکی بڑھانےوالی 5 غذائیں، اگر آپ کے بال روکھے ہیں تو یہ غذائیں نہ کھائیں

بال ہماری شخصیت کی خوبصورتی میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ یہ اگر خوبصورت ہوں تو آپ کی شخصیت کو بھی چار چاند لگ جاتے ہیں۔ اور اگریہ روکھے اوربےرونق ہوں تو آپ کی شخصیت گہنا جاتی ہے۔ اسی لئے اپنے بالوں کی خوبصورتی کے لئے آپ کو اپنی غذائی عادات میں کچھ تبدیلی کرنی ہوگی۔ اگر آپ کے بال گر رہے ہیں ان میں خشکی ہے جو آپ کے بالوں کی جڑوں کو کمزور کررہی ہے تو پھر اس خشکی کا علاج ضروری ہے۔۔ بالوں کا گرنا ایک فطری بات ہے لیکن بہت زیادہ گرنا تشویش کی بات ہے جس کا فوری سدباب ہونا چاہیے۔

1۔ میدے کا استعمال روک دیں:

میدے سے بنی اشیاء سے پرہیز کریں ، اس سے بنے کیک، بسکٹ، نوڈلز یا دوسری چیزیں نہ کھائیں کیونکہ یہ آپ کے بالوں کی خشکی میں اضافہ کرے گا۔

2. نمک اور دودھ کا ایک ساتھ استعمال:

نمک اور دودھ کا ایک ساتھ استعمال دودھ کی افادیت کو کم کر دیتا ہے۔ جیسے کسی نمکین چیز کے ساتھ دودھ اگر پئیں یا نمکین بسکٹ وغیرہ یا پراٹھا وغیرہ کھائیں اس کے ساتھ دودھ پئیں تو دودھ کی پوری غذائیت آپ کو نہیں مل سکے گی۔ اور یہ دوسری بیماریوں کا بھی موجب بن جائے گا۔

3۔ الکحلک ڈرنک سے گریز کریں:

اگر آپ کے بال گرنا کم نہیں ہورہے تو الکحلک ڈرنک کا استعمال ختم کردیں۔ الکحلک ڈرنک پینے والوں کو بالوں میں خشکی اور بالوں کے گرنے کا مسئلہ زیادہ ہوتا ہے۔ اس لئے اس سے پرہیز ضروری ہے۔

4۔ مرغن غذاؤں سے پرہیز کریں:

اگر آپ مرغن غذاؤں کے شوقین ہیں تو بالوں میں خشکی اور گرنے کی صورت میں آپ کو مرغن یا تیل والی غذاؤں سے پرہیز کرنا ضروری ہے۔ اگر آپ زیادہ تیل والے کھانے یا سبزیاں کھائیں گے تو بالوں کی غذائیت کم ہوگی اور بال زیادہ گریں گے۔اس لئے مناسب یہی ہے کہ ہلکے تیل والی غذا کھائیں اور کچھ پھل اور سبزیوں کا زیادہ استعمال کریں۔

5. سافٹ ڈرنکس کا استعمال بند کردیں:

اگر بالوں میں خشکی ہورہی ہے یا بال گر رہے ہیں تو پھر سافٹ ڈرنکس پینا چھوڑ دیں۔ سافٹ ڈرنکس کا زیادہ استعمال بھی جسم کو نقصان پہنچانے کا سبب بن جاتا ہے۔ خاص طور پربال اس سے ضرورمتاثر ہوتے ہیں۔۔ اس سے جسم میں شکر کی مقدار برھ جاتی ہے جس سے دل جگر اور بال سب متاثر ہوتے ہیں۔
بعض اوقات بالوں کی خشکی کی وجہ پانی کی خرابی یا آپ کے زیر استعمال شیمپووغیرہ کا بھی آپ کے بالوں کو سوٹ نہ کرنا ہوسکتا ہےاگران تبدیلیوں سے فرق نہ پڑے تو پھرغذا میں تبدیلی ضروری ہے۔

Balon Mein Khushki Ki Wajuhat

Discover a variety of Tips and Totkay articles on our page, including topics like Balon Mein Khushki Ki Wajuhat and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Balon Mein Khushki Ki Wajuhat to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Afshan  |   In Tips and Totkay  |   0 Comments   |   2341 Views   |   02 Jul 2022

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. KFoods.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.

About the Author:

Afshan is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Afshan is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 02 March 2024)

بالوں میں خشکی بڑھانےوالی 5 غذائیں، اگر آپ کے بال روکھے ہیں تو یہ غذائیں نہ کھائیں

بالوں میں خشکی بڑھانےوالی 5 غذائیں، اگر آپ کے بال روکھے ہیں تو یہ غذائیں نہ کھائیں ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ بالوں میں خشکی بڑھانےوالی 5 غذائیں، اگر آپ کے بال روکھے ہیں تو یہ غذائیں نہ کھائیں سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔