بچوں کو درد سے تڑپتا نہیں دے سکتے تھے اس لیے اپنے گردے انھیں دے دیے.. ماں باپ کی قربانی کی عظیم کہانی

"جب ہمارا بیٹا پیدا ہوا تو ہمیں اندازہ نہیں تھا کہ وہ ایک خطرناک بیماری Autosomal Recessive Polycystic Kidney Disease میں مبتلا ہے جس کے بعد اس کے جسم سے گردے نکال دیے گئے تھے اور اسے تب تک ڈائیلائسز کروانا تھا جب تک کوئی اسے گردے عطیہ نہ کردے۔"

یہ کہنا ہے آرون روڈس کا جنھوں نے اپنے بیٹے کو ایک گردہ عطیہ کیا۔ لیکن کہانی یہاں ختم نہیں ہوتی بلکہ کچھ سال بعد جب ان کی بیٹی پیدا ہوئی تو اسے بھی بھائی کی طرح ہی گردے اور جگر کا مرض لاحق تھا۔ اس بار ان کی اہلیہ وینیسا نے بیٹی کو اپنا ایک گردہ دیا اور اب یہ پورا خاندان صرف ایک ایک گردے پر زندہ ہے۔

دونوں بچے چاننگ اور ایورلی اب کسی حد تک ایک عام. زندگی گزارنے کے قابل ہوگئے ہیں جس میں ان کے ماں باپ کی قربانی کا ہاتھ شامل ہے۔

آرون اور وینیسا کہتے ہیں کہ ہمیں ہر حال میں اپنے بچوں کی زندگی بچانی تھی۔ کسی بھی والدین کی طرح ہم اپنے بچوں کو تڑپتا نہیں دیکھ سکتے تھے اس لئے ہم سے جو ہوسکا وہ کیا۔ گردے عطیہ کرنا اچھی بات ہے۔ اگر آپ اپنا گردہ دے کر کسی کی جان بچا سکتے ہیں تو ایسا ضرور کرنا چاہیے۔ ہم خوش نصیب ہیں جو اپنے بچوں کی جان بچا سکے۔

By Khush Bakht  |   In News  |   0 Comments   |   426 Views   |   15 Oct 2022
Related Articles
Top Trending
Comments/Ask Question

Read Blog about بچوں کو درد سے تڑپتا نہیں دے سکتے تھے اس لیے اپنے گردے انھیں دے دیے.. ماں باپ کی قربانی کی عظیم کہانی and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (بچوں کو درد سے تڑپتا نہیں دے سکتے تھے اس لیے اپنے گردے انھیں دے دیے.. ماں باپ کی قربانی کی عظیم کہانی) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.