دیمک سے نجات پانے کے 8 آسان گھریلو ٹوٹکے

دیمک ایک کیڑا ہے جو کالونی کی شکل میں رہتا ہے اس کی غذا لکڑی ہے اس لیے یہ پودوں اورلکڑی میں پائی جاتی ہے۔ جس لکڑی میں بھی دیمک لگ جاتی ہے یہ اس کو پوری طرح ختم کردیتی ہے۔
دیمک کئی قسم کی ہوتی ہے لیکن اس میں سب سے عام لکڑی کی دیمک ہے جو لکڑی سے بنی چیزوں میں ہوتی ہے ۔ یہ دیمک گھر سے باہر اپنا ڈیرہ جماتی ہیں ۔لیکن پھر زمین کے اندر چھوٹی چھوٹی سرنگیں بنا کر گھروں میں داخل ہوجاتی ہیں۔
دیمک کے گھر میں داخل ہونے کی کچھ نشانیاں ہوتی ہیں۔
دیواروں پر مٹی کی باریک نالیاں یا جھاڑیاں گھر میں دیمک کی نشاندہی کرتی ہیں ۔
دروازے یا کھڑکیوں کا رنگ پھولاہوا یا چٹخا ہوا نظر آئے تو اس کا مطلب ہے کہ دیمک لکڑی کو اندر سے کھاتے ہوئے رنگ کی سطح تک پہنچ گئی ہے۔
۔ جب ٹھوس لکڑی بجانے سے کھوکھلی آواز نکلے تو اس کا مطلب ہے کہ لکڑی کو دیمک نے اندر سے کھایا ہوا ہے۔
دیمک کا کوئی موسم نہیں ہوتا اور یہ سال کے کسی بھی حصے میں حملہ آور ہوسکتی ہے۔ دیمک کے آثار گھر میں نظر آئیں تو فوری طور پر دواؤں اور فیومیگیشن کا استعمال کرنا چاہئے۔
لیکن اگر آپ ان دواؤں سے الرجک ہیں تو ان کے علاوہ دوسرے طریقوں سے بھی دیمک سے نجات پاسکتے ہیں ۔

دیمک لگی چیز کو دھوپ میں رکھیں:
سورج کی روشنی دیمک کو بہت زیادہ متاثر کرتی ہے اگر کسی فرنیچر میں دیمک لگ گئی ہے تواسے دھوپ میں رکھ دیں الٹرا وائلیٹ ریز دیمک کو فرنیچر سے نکلنے پر مجبور کردیں گی۔
۔ دیمک لگا ہوا فرنیچر ایسی جگہ رکھیں جہاں براہ راست دھوپ پڑتی ہو۔
۔ کوشش کریں کہ فرنیچر ۳ سے ۵ دن کے لیے دھوپ میں رکھا رہے۔

کارڈ بورڈ ٹریپ:
گتے میں cellulose ہوتا ہے جو دیمک کھاتی ہے ۔ گتے کے ڈبے کو گیلا کر کے ان جگہوں پر رکھیں جہاں دیمک موجود ہو ۔ گیلے گتے کی بو دیمک کو اپنی طرف متوجہ کرے گی۔
۔ بل والے گتے کے ڈبوں کو گیلا کر کے متاثرہ حصے کے پاس رکھ دیں۔

نارنگی کا تیل:
۔ جن جگہوں پر دیمک موجود ہو وہاں نارنگی کا تیل کچھ دنوں تک روزانہ لگائیں۔
۔ متاثرہ حصوں میں چھوٹے سوراخ کر کے یا سرنج کے ذریعے بھی کھوکھلی جگہ میں تیل ڈال سکتے ہیں ۔
۔ جب تک دیمک کا خاتمہ نہ ہوجائے اسی طرح تیل ڈالتے رہیں۔

نیم کا تیل :
نیم کا تیل ہلکے ہلکے اثر دکھاتا ہے ۔ لیکن یہ دیمک کو بڑھنے نہیں دیتا ۔ نیم کا تیل دیمک کا خاتمہ کردیتا ہے اگر براہ راست دیمک پر لگے۔
۔ روئی پر نیم کا تیل لگا کر متاثرہ فرنیچر یا دروازے کھڑکیوں پر لگائیں ۔ دیمک اس تیل کو چاٹ کر ختم ہوجاتی ہے۔
۔ نیم کا تیل بار بار لگانے سے کچھ ہی دنوں میں دیمک کا خاتمہ ہوجائے گا۔

بوریکس:
دیمک کو ختم کرنے کے لیے بوریکس بھی کارآمد ہے۔
۔ دیمک لگے حصے پر بوریکس کی تہہ لگادیں ۔
۔ ہر دوسرے دن ایک ہفتے تک اس طرح کرنے سے دیمک کا خاتمہ ہوجائے گا۔
۔ بوریکس کا سلوشن بنا کر بھی لکڑی کی سطح پر اسپرے کیا جاسکتا ہے ۔
سلوشن بنانے کے لیے ۸ اونس گرم پانی میں ایک چائے کا چمچ بوریکس ملا کر اسپرے کریں۔

صابن کا پانی:
صابن کا پانی دیمک کے خول پر ایک تہہ بنادیتا ہے جس سے ان کا سانس لینے کا نظام ختم ہوجاتا ہے ۔اور وہ مرجاتی ہیں۔
۔ دو کھانے کے چمچ برتن دھونے والا لکوڈ سوپ ۴ کپ پانی میں ملائیں۔
۔ یہ سلوشن اسپرے بوتل میں ڈالکر متاثرہ جگہوں پر اسپرے کریں۔
۔ نتائج سامنے آنے تک روزانہ یہ عمل کریں۔

سفید سرکہ :
چھوٹی جگہ پر پیدا ہونے والی دیمک کو سفید سرکے سے کنٹرول کیا جاسکتا ہے ۔
۔ آدھا کپ سرکہ اور ۲لیموں کا رس ملالیں۔
۔ یہ سلوشن اسپرے بوتل میں ڈالکر دیمک لگی جگہ پر کریں ۔
۔ کچھ دنوں تک دن میں دو مرتبہ یہ اسپرے کریں۔

نمک:
دیمک کو ختم کرنے میں نمک بھی بہت کار آمد ہے یہ دیمک کو بڑھنے سے روکتا ہے ۔ اور دوسری چیزوں کو دیمک لگنے سے محفوظ رکھتا ہے۔
۔ برابر کی مقدار میں نیم گرم پانی اور نمک لے کر ایک باؤل میں مکس کرلیں۔ یہاں تک کہ نمک پانی میں حل ہوجائے ۔
۔ یہ سلوشن سرنج میں بھر کر دیمک لگی چوکھٹوں میں ڈالیں۔
۔ کچھ دن تک روزانہ کریں۔

Termite Ka Ilaj

Discover a variety of Tips and Totkay articles on our page, including topics like Termite Ka Ilaj and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Termite Ka Ilaj to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Aqib Shahzad  |   In Tips and Totkay  |   0 Comments   |   13753 Views   |   05 Jun 2020

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. KFoods.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.

About the Author:

Aqib Shahzad is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Aqib Shahzad is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 02 March 2024)

دیمک سے نجات پانے کے 8 آسان گھریلو ٹوٹکے

دیمک سے نجات پانے کے 8 آسان گھریلو ٹوٹکے ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ دیمک سے نجات پانے کے 8 آسان گھریلو ٹوٹکے سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔