سوشل میڈیا کی لت آپ کو ڈپریشن اور پریشانی کا شکار بنا سکتی ہے ۔۔ اس لت سے چھٹکارہ پانا ممکن ہے؟

ہم سب بخوبی جانتے ہیں کہ کس طرح سوشل میڈیا ہماری زندگی کا لازمی حصہ بن گیا ہے۔ جس طرح ہر چیز کے اچھے اور برے پہلو ہوتے ہیں اسی طرح سوشل میڈیا بھی جہاں ایک طرف یہ تفریح اور نئی چیزیں سیکھنے کا ذریعہ ہے تو دوسری طرف یہ سب سے طاقتور ہتھیار ہے۔ ہتھیار کیونکہ آپ سوشل میڈیا سے کسی کی بھی زندگی کو بگاڑ اور بنا سکتے ہیں ۔

سب سے بڑی بات یہ ہے کہ سوشل میڈیا کی لت ہماری صحت کو بھی متاثر کر رہی ہے۔ اس کے نہ صرف جسمانی بلکہ لوگوں کے دماغ پر بھی منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ جس کے بارے میں ماہرین کافی عرصے سے خبردار کر رہے ہیں۔ ایک حالیہ تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ جو لوگ سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال کرتے ہیں وہ ذہنی مریض بن جاتے ہیں۔ تحقیق کے مطابق سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال نیند کی کمی یا بے سکونی کا باعث بن سکتا ہے۔ مسلسل ایسا کرنے سے ڈپریشن، یادداشت کا کمزور ہونا، دماغی صلاحیت میں کمی جیسے مسائل کا امکان رہتا ہے۔ اس کے علاوہ ماہرین نے پیٹ کا مسئلہ، سردرد، آنکھوں میں درد، متلی، پٹھوں میں تناؤ جیسے مسائل سے خبردار کیا۔

سوشل میڈیا پر لوگوں کی رنگین زندگیوں کو دیکھ کر بہت سے لوگوں کو احساس ہوتا ہے کہ دوسرے لوگوں کی زندگی کتنی اچھی ہے، وہ کتنے خوش ہیں اور میری زندگی میں تناؤ رک نہیں رہا ہے۔ یہ احساس انہیں آہستہ آہستہ ڈپریشن کا شکار بناتا ہے۔ ڈپریشن میں مبتلا شخص خود کو لوگوں سے الگ تھلگ رکھتا ہے، کسی چیز کے بارے میں اچھا محسوس نہیں کرتا، اکثرمنشیات کا عادی بھی ہو جاتا ہے اور بعض اوقات خودکشی کے خیالات بھی آ سکتے ہیں۔ سوشل میڈیا کی وجہ سے لوگ اپنے جسم کے حوالے سے بھی غیر محفوظ ہوتے جا رہے ہیں۔ لیکن ہم بھول جاتے ہیں کہ سوشل میڈیا ایک ورچوئل دنیا ہے، یہ وہی دکھاتا ہے جو ہم لوگوں کو دکھانا چاہتے ہیں۔ ریل اور حقیقی زندگی بہت مختلف ہیں۔

لہٰذا اگر آپ نے محسوس کرنا شروع کر دیا ہے کہ سوشل میڈیا آپ کی صحت اور دماغ کو کسی نہ کسی طرح متاثر کر رہا ہے تو اس پر توجہ دینا اور اس کا حل تلاش کرنا بہت ضروری ہے۔ اس کے لیے یہاں دی گئی تجاویز آپ کے لیے بہت کارآمد ثابت ہو سکتی ہیں۔

٭پہلے چند دنوں کے لیے سوشل میڈیا سے وقفہ لیں۔
٭اپنے پیاروں کے ساتھ وقت گزاریں، ان سے بات کریں۔ دوستوں سے ملنا جلنا کریں۔
٭اگر وقفہ لینا ممکن نہ ہو تو اسے استعمال کرنے کے لیے ایک وقت مقرر کریں۔
٭ایپ کے نوٹیفکیشنزکو بند کردیں کیونکہ یہ بھی ایک بہت بڑا خلفشار ہیں جو لت کو دور نہیں ہونے دیتے۔
٭منفی شخص کو اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ اور زندگی سے فوری طور پر ہٹا دیں یعنی بلاک کردیں یا ریمووکردیں۔
اس لیے اگر سوشل میڈیا کا صحیح استعمال کیا جائے تو یقیناً آپ اپنے علم اور زندگی کو بہتر بنا سکتے ہیں، لیکن غلط استعمال سے پریشانی ہی بڑھ سکتی ہے۔ تو آپ کو یہ فیصلہ کرنا ہی ہوگا۔

Social Media Insity Kia Hai

Discover a variety of News articles on our page, including topics like Social Media Insity Kia Hai and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Social Media Insity Kia Hai to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Afshan  |   In News  |   0 Comments   |   1746 Views   |   26 Sep 2022
About the Author:

Afshan is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Afshan is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 15 April 2024)

سوشل میڈیا کی لت آپ کو ڈپریشن اور پریشانی کا شکار بنا سکتی ہے ۔۔ اس لت سے چھٹکارہ پانا ممکن ہے؟

سوشل میڈیا کی لت آپ کو ڈپریشن اور پریشانی کا شکار بنا سکتی ہے ۔۔ اس لت سے چھٹکارہ پانا ممکن ہے؟ ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ سوشل میڈیا کی لت آپ کو ڈپریشن اور پریشانی کا شکار بنا سکتی ہے ۔۔ اس لت سے چھٹکارہ پانا ممکن ہے؟ سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔