ان مسائل میں مبتلا افراد غلطی سے بھی لہسن نہ کھائیں ۔۔ جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے

لہسن نہ صرف کھانے کا ذائقہ بڑھاتا ہے بلکہ اس کے صحت کے لیے بے شمار فوائد بھی ہیں۔ بہت سے خواص سے بھرپور لہسن بعض سنگین بیماریوں کا علاج بھی ہے۔ لہسن کا باقاعدگی سے استعمال صحت کے لیے بہت سے فوائد کا حامل ہے۔ لیکن لہسن کے نہ صرف فوائد بلکہ نقصانات بھی ہیں۔ تو آج اس آرٹیکل میں ہم آپ کو بتائیں گے کہ لہسن کہاں لوگوں کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے۔ تو اس مضمون کو آخر تک پڑھیں۔

لہسن کے غذائی اجزاء :

لہسن میں اینٹی بیکٹیریل، اینٹی وائرل، اینٹی فنگل اور اینٹی آکسیڈینٹ خصوصیات ہیں۔ یہ وٹامن اے، بی-1، بی-6، سی، میگنیشیم، کیلشیم، کاپر، سلفیورک ایسڈ اور فاسفورس جیسے عناصر کا ذخیرہ ہے۔

لہسن کے فوائد کولیسٹرول، ہائی بلڈ پریشر، لو بلڈ پریشر، امراض قلب، ہارٹ اٹیک، کینسر، گردے کی بیماری، جگر کی بیماری، نزلہ، بخار، ذیابیطس اور جلد کے مسائل سے تحفظ فراہم کرتے ہیں۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ لہسن کا استعمال ہر شخص اور ہر حال میں فائدہ مند نہیں ہوتا۔

لہسن کے نقصانات:

صبح خالی پیٹ لہسن کا استعمال پیٹ سے متعلق مسائل کو دور کرتا ہے اور گرمی کا اثر رکھتا ہے۔ ماہرین کا خیال ہے کہ بعض صورتوں میں لہسن کا استعمال فائدہ مند نہیں ہوتا اور اس سے موت کا خطرہ بھی ہوتا ہے۔

کم ہیموگلوبن:

اگر آپ کے خون میں ہیموگلوبن کی سطح کم ہے تو آپ کو لہسن کا استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ لہسن کا استعمال ہیمولٹک انیمیا کا سبب بن سکتا ہے۔ خواتین میں ہیموگلوبن کا مسئلہ زیادہ ہوتا ہے۔

لو بلڈ پریشر کی صورت میں:

جس کسی کو بلڈ پریشر کا مسئلہ ہو اسے لہسن کے استعمال سے پرہیز کرنا چاہیے اور اگر ممکن ہو تو لہسن کا استعمال بالکل نہیں کرنا چاہیے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ لہسن بلڈ پریشر کو کم کرتا ہے اورکم بلڈ پریشر والے لوگوں کے لیے جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے۔

مانع حمل ادویات کے استعمال پر:

اگر کوئی عورت پیدائش پر قابو پانے کی گولیاں کھا رہی ہے تو اسے لہسن کا زیادہ استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ دراصل لہسن اور مانع حمل دوائیں مل کر جسم میں زیادہ گرمی پیدا کرتی ہیں جو کہ جسم کے لیے نقصان دہ ہو سکتی ہیں۔ حمل کا وقت:

حاملہ خواتین کو دوران حمل لہسن کا زیادہ استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ لہسن میں گرمی کا اثر ہوتا ہے، جو اسقاط حمل کا سبب بن سکتا ہے۔

اگر جگر سے متعلق کوئی مسئلہ ہے:

اگر کسی شخص کو جگر سے متعلق کوئی مسئلہ ہے، یا جگر سے متعلق کوئی علامات ہیں، تو اس شخص کو لہسن بالکل نہیں کھانی چاہیے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ لہسن کا زیادہ استعمال جگر کے مسائل کو بڑھا سکتا ہے۔ اس لیے لہسن کھانے سے پہلے ایسے افراد کو جگر سے متعلق مسائل کی جانچ کر لینی چاہیے۔

By Afshan    |    In Health and Fitness   |    0 Comments    |    733 Views    |    30 Sep 2022

Related Articles

Comments/Ask Question

Read Blog about ان مسائل میں مبتلا افراد غلطی سے بھی لہسن نہ کھائیں ۔۔ جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (ان مسائل میں مبتلا افراد غلطی سے بھی لہسن نہ کھائیں ۔۔ جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.