یورک ایسڈ، خاموش مگر خطرناک مرض ۔۔ جانیں وہ غذائیں کون سی ہیں جو یورک ایسڈ کو کم کرنے میں آپ کی مدد کرسکتی ہیں؟

یورک ایسڈ ایک قدرتی فضلہ ہے جو جسم میں اس وقت بنتا ہے جب پیورین (ایک قسم کا کیمیکل کمپاؤنڈ جو بعض کھانوں اور جسم کے بافتوں میں پایا جاتا ہے)، ٹوٹ جاتا ہے۔ یہ عام طور پر خون میں تحلیل ہوتا ہے اور پیشاب میں گردوں کے ذریعے خارج ہوتا ہے۔ تاہم، جب خون کے دھارے میں یورک ایسڈ بہت زیادہ جمع ہو جاتا ہے یا جب گردے اسے مؤثر طریقے سے ختم نہیں کر پاتے ہیں، تو یہ ایک ایسی حالت کا باعث بن سکتا ہے جسے ہائپروریسیمیا کہا جاتا ہے۔

ہائپر یوریسیمیا، گاؤٹ نامی تکلیف دہ حالت پیدا کرنے کے لیے ایک اہم خطرے کا عنصر ہے، جس کی خصوصیت جوڑوں کی اچانک اور شدید سوزش ہوتی ہے، عام طور پر پیر کی انگلی۔ یورک ایسڈ کی اعلی سطح گردے کی پتھری کا سبب بھی بن سکتی ہے۔

غذا کے ذریعے یورک ایسڈ کی سطح کو کنٹرول کرنے میں مدد کے لیے یہاں کچھ غذائیں درج ذیل ہے۔

چیری:

چیری، خاص طور پر ٹارٹ چیری یا چیری کا جوس، یورک ایسڈ کی سطح کو کم کرنے اور گاؤٹ کے حملوں کی تعدد کو کم کرنے کے لیے مفید ہے۔ ان میں مرکبات ہوتے ہیں جو سوزش کو کم کرنے اور یورک ایسڈ کے اخراج کو فروغ دینے میں مدد کرتے ہیں۔

بیریاں:

اسٹرابیری، بلیو بیری اور بلیک بیری جیسی بیریاں اینٹی آکسیڈنٹس اور وٹامن سی سے بھرپور ہوتی ہیں، جو سوزش کو کم کرنے اور یورک ایسڈ کی سطح کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتی ہیں۔

سیب:

سیب میں مالیک ایسڈ ہوتا ہے، جو یورک ایسڈ کو بے اثر کرنے اور گردے کے کام میں مدد فراہم کرتا ہے۔

سٹرس فروٹ:

کینو، موسمبی، لیموں اور لیموں جیسے کھٹّے پھلوں میں وٹامن سی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے، جس میں سوزش کی خصوصیات ہوتی ہیں اور یہ یورک ایسڈ کی سطح کو کم کرنے میں مؤثر کردار ادا کرتے ہیں۔

کیلے:

کیلے میں پیورین کی مقدار کم ہوتی ہے اور یہ یورک ایسڈ کی سطح کو کم کر سکتا ہے۔ کیلے پوٹاشیم جیسے اہم غذائی اجزاء بھی فراہم کرتے ہیں۔

انناس:

انناس میں برومیلین ہوتا ہے، ایک انزائم جس میں سوزش کی خصوصیات ہوتی ہیں جو گاؤٹ سے وابستہ سوزش کو کم کرنے میں مدد کر سکتی ہیں۔

سبز پتوں والی سبزیاں:

گوبھی، پالک جیسی دیگر ہرے پتے والی سبزیوں میں پیورین کی مقدار کم اور فائبر زیادہ ہوتا ہے، جو بڑھتے ہوئے یورک ایسڈ کو کم کرسکتے ہیں۔

اجوائن:

اجوائن میں ایسے مرکبات ہوتے ہیں جو سوزش کو کم کرنے اور یورک ایسڈ کی سطح کو کم کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔

کم چکنائی والی دودھ کی مصنوعات

کم چکنائی والی دودھ کی مصنوعات جیسے اسکم دودھ اور دہی، یورک ایسڈ کی سطح کو کم کرتے ہیں۔ ڈیری میں موجود کیلشیم یورک ایسڈ کے اخراج میں بھی مدد کر سکتا ہے۔

Best Food For Uric Acid In Urdu

Discover a variety of Health and Fitness articles on our page, including topics like Best Food For Uric Acid In Urdu and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Best Food For Uric Acid In Urdu to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Salwa Noor  |   In Health and Fitness  |   0 Comments   |   2094 Views   |   04 Sep 2023
About the Author:

Salwa Noor is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Salwa Noor is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 18 April 2024)

یورک ایسڈ، خاموش مگر خطرناک مرض ۔۔ جانیں وہ غذائیں کون سی ہیں جو یورک ایسڈ کو کم کرنے میں آپ کی مدد کرسکتی ہیں؟

یورک ایسڈ، خاموش مگر خطرناک مرض ۔۔ جانیں وہ غذائیں کون سی ہیں جو یورک ایسڈ کو کم کرنے میں آپ کی مدد کرسکتی ہیں؟ ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ یورک ایسڈ، خاموش مگر خطرناک مرض ۔۔ جانیں وہ غذائیں کون سی ہیں جو یورک ایسڈ کو کم کرنے میں آپ کی مدد کرسکتی ہیں؟ سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔