کیلے جلدی خراب ہوجاتے ہیں تو... سستے کیلوں کو مہینوں محفوظ بنانے کے طریقے جو انہیں کبھی کالا نہیں ہونے دیں گے

عام طور پر کیلے کا شمار ان پھلوں میں ہوتا ہے جو مارکیٹ میں سال کے بارہ مہینے دستیاب ہوتے ہیں۔ بچوں کی ابتدائی خوراک سے لے کر جوان سے بوڑھوں تک ہر کوئی مختلف طریقوں سے اس کو استعمال کرتے ہیں- زود ہضم ہونے کے سبب اگر شیر خوار بچوں کے لیے کیلے کا استعمال مفید ہوتا ہے تو باڈی بلڈنگ اور وزن بڑھانے کے شوقین جوانوں کے لیے کیلے کھانا ضروری ہوتا ہے۔ بزرگ افراد بھی ہاضمے کے لیے اس کے فوائد کا سبب اس کا استعمال باقاعدگی سے کرتے ہیں-

کیلا ہوا سستا

آج کل ہر دوسری ریڑھی اور پھلوں کی دکان میں کیلا وافر مقدار میں نظر آرہا ہے اور اس کا ریٹ کافی سستا ہے جلد خراب ہوجانے کے سبب ہر دکاندار کی یہی کوشش ہوتی ہے کہ دن کے اختتام سے قبل اپنی ریڑھی خالی کر دے کیوں کہ اگلے دن تک یہ کیلے گل جاتے ہیں- اس وجہ سے کافی سستے مل سکتے ہیں مگر ہر فرد ایک حد سے زيادہ کیلے خریدنے سے ڈرتا ہے کیوں کہ یہ جلد خراب ہو جاتے ہیں- مگر آج ہم آپ کو یہ مشورہ دیں گے کہ موقع سے فائدہ اٹھائيں اور اس وقت سستے کیلے خرید کر اس طریقے سے محفوظ کریں اور اگلے کئی مہینوں تک اس سے فائدہ اٹھائيں-

کیلے محفوظ کرنے کے طریقے

دیر تک کیلے تازہ رکھنے کا طریقہ

اگر آپ بازار سے زيادہ کیلے خرید کر سستے کیلے گھر لے آئے ہیں اور اس بات کے خواہشمند ہیں کہ یہ زيادہ دنوں تک تازہ رہیں تو اس کے لیے سب سے پہلے آپ کیلے کے ڈنٹھل کو کسی پلاسٹک کے بیگ سے کور کر دیں-

اس کی وجہ سے کیلے زيادہ دنوں تک اپنی حالت برقرار رکھیں گے اور فوری طور پر گلنے سے محفوظ رہیں گے پلاسٹک سے اس کی ڈنڈی کو کور کرنے سے کیلے فریج سے باہر بھی تین سے چار دن تک اپنی تازگی برقرار رکھ سکتے ہیں- لیکن یاد رکھیں کہ پہلے سے گلے ہوئے کیلے مت خریدیں بلکہ ایسے کیلے خریدیں جو کسی حد تک تازہ اور پکے ہوئے ہوں-

کیلے کو چھلکوں کے ساتھ فریز کرنا

عام طور پر کسی بھی چیز کو زیادہ دنوں تک محفوظ کرنے کے لیے ہم لوگ فریز کر دیتے ہیں لیکن کیلوں کا معاملہ اس حوالے سے قدرے مختلف ہوتا ہے کہ اگر اس کو فریزر میں رکھا جاتا ہے تو اس کا چھلکا کالا اور بد نما ہو جاتا ہے اور اس کو اس وجہ سے پھینک دیا جاتا ہے-

جبکہ حقیقت یہ ہے کہ کیلے کو چھلکے سمیت کسی بھی ائیر ٹائٹ بیگ میں آسانی سے محفوظ کیا جا سکتا ہے۔ اگرچہ اس کا چھلکا سیاہ ہو بھی جائے تو اس چھلکے کو اتاریں تو اندر سے کیلا تازہ ہوتا ہے اور اس کو آرام سے استعمال کیا جا سکتا ہے-

کیلے کو بغیر چھلکوں کے محفوظ کرنے کا طریقہ

عام طور پر لوگوں کا یہ ماننا ہے کہ بغیر چھلکوں کے جب کیلے کو فریزر میں رکھا جاتا ہے تو وہ کالے ہو جاتے ہیں اور استعمال کے قابل نہیں رہتے ہیں تو اس کو بھی محفوظ رکھنے کے مختلف طریقے ہیں-

اگر آپ کیلوں کو محفوظ رکھنا چاہتے ہیں تو اس کا ایک بہت عام طریقہ ہے کہ کیلے چھیل لیں اور ان کو میش کر لیں اور اس کے بعد کسی ائير ٹائٹ بیگ میں ان کو فریز کر دیں اس طرح سے کیلے دو سے تین مہینوں تک ملک شیک بنانے میں استعمال کیے جا سکتے ہیں-

کیلے کی لذیذ آئیسکریم بنا لیں

بچوں کو عام طور پر آئسکریم کے نام پر بہت مزیدار چیزيں گذر پر ہی بنا کر دی جا سکتی ہیں اس کے لیے کیلا چھیل لیں اور پگھلی ہوئی چاکلیٹ میں اس کو کوٹ کر دیں اور فریزر میں رکھ دیں- اس طرح سے ایک جانب تو کیلے کا رنگ خراب نہ ہوگا اور چاکلیٹ آئسکریم کی صورت میں یہ بچوں کے لیے صحت بخش اور ٹیسٹی آئس کریم بن جائے گی-

کیلے کے سلائس بنا کر فریز کرنا

کسی بھی ڈش میں کیلے کے سلائس بنا لیں اور اس کے اوپر تھوڑا سا لیموں کا رس یا پائن ایپل جوس ڈال کر اس کو فریز کر دیں اور مزیدار فروٹ سلاد کے طور پر کافی دن تک استعمال کریں-

کیلے محفوظ کرتے ہوئے یہ نہ کریں

کیلوں کو اگر آپ محفوظ رکھنا چاہتے ہیں تو یہ کام نہ کریں
کسی تھیلی میں مکمل کیلے کے گچھے کو مت رکھیں بلکہ اس کو ٹھنڈی جگہ پر کھول کر رکھیں ورنہ یہ بہت جلدی خراب ہو جائيں گے-
دوسرے پھلوں کے ساتھ مت رکھیں کیوں کہ کیلے نازک ہوتے ہیں جلد خراب ہونے لگتے ہیں-
ان کے اوپر دباؤ مت ڈالیں کیوں کہ زيادہ دباؤ کیلوں کو خراب کر دیتا ہے-
امید ہے کہ یہ تمام معلومات آج کل کے دنوں میں موجود سستے کیلوں سے فائدہ اٹھانے میں آپ کے لیے مفید ثابت ہوں گی-

Kele Mehfooz Karne Ka Tarika

Discover a variety of Tips and Totkay articles on our page, including topics like Kele Mehfooz Karne Ka Tarika and other health issues. Get detailed insights and practical tips for Kele Mehfooz Karne Ka Tarika to help you on your journey to a healthier life. Our easy-to-read content keeps you informed and empowered as you work towards a better lifestyle.

By Ambreen  |   In Tips and Totkay  |   0 Comments   |   3914 Views   |   28 Feb 2023

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. KFoods.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.

About the Author:

Ambreen is a content writer with expertise in publishing news articles with strong academic background. Ambreen is dedicated content writer for news and featured content especially food recipes, daily life tips & tricks related topics and currently employed as content writer at kfoods.com.

Related Articles
Top Trending
COMMENTS | ASK QUESTION (Last Updated: 23 July 2024)

کیلے جلدی خراب ہوجاتے ہیں تو... سستے کیلوں کو مہینوں محفوظ بنانے کے طریقے جو انہیں کبھی کالا نہیں ہونے دیں گے

کیلے جلدی خراب ہوجاتے ہیں تو... سستے کیلوں کو مہینوں محفوظ بنانے کے طریقے جو انہیں کبھی کالا نہیں ہونے دیں گے ہر کسی کے لیے جاننا ضروری ہیں کیونکہ یہ ایک اہم معلومات ہے۔ کیلے جلدی خراب ہوجاتے ہیں تو... سستے کیلوں کو مہینوں محفوظ بنانے کے طریقے جو انہیں کبھی کالا نہیں ہونے دیں گے سے متعلق تفصیلی معلومات آپ کو اس آرٹیکل میں بآسانی مل جائے گی۔ ہمارے پیج پر کھانوں، مصالحوں، ادویات، بیماریوں، فیشن، سیلیبریٹیز، ٹپس اینڈ ٹرکس، ہربلسٹ اور مشہور شیف کی بتائی ہوئی ہر قسم کی ٹپ دستیاب ہے۔ مزید لائف ٹپس، صحت، قدرتی اجزاء اور ماڈرن ریمیڈی کے فوڈز میں موجود ہے۔