Pait Ki Charbi Kaha Jati Hai

توند سے نجات پر چربی کہاں جاتی ہے؟

دنیا بھر میں لوگ توند کی چربی گھلانے کے لیے فکرمند رہتے ہیں اور اس کے لیے مختلف غذاﺅں یا طریقوں کو آزماتے ہیں، جن میں سے بیشتر کامیاب نہیں ہوپاتے۔

تاہم کبھی آپ نے سوچا کہ جو لوگ کامیاب ہوکر اضافی چربی کو گھلا دیتے ہیں تو وہ جاتی کہاں ہے؟ یہ وہ سوال ہے جس کا جواب 98 فیصد ڈاکٹر بھی نہیں دے پاتے۔
تاہم اب آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے طبی ماہرین نے اس کا جواب ڈھونڈ نکالا ہے۔
نیو ساﺅتھ ویلز یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ عام افراد سے لے کر ڈاکٹروں میں سب سے عام غلط فہمی یہ پائی جاتی ہے کہ اضافی جسمانی چربی گھل کر توانائی کی شکل اختیار کرلیتی ہے۔
تحقیق میں بتایا گیا کہ اس خیال میں مسئلہ یہ ہے کہ یہ مادے کی منتقلی کے قانون کے خلاف ہے۔
محققین کا کہنا تھا کہ کچھ لوگوں کو لگتا ہے کہ یہ چربی شکل تبدیل کرکے مسل کی شکل اختیار کرلیتی ہے جو کہ ناممکن ہے جبکہ دیگر کو لگتا ہے کہ یہ آنتوں کے راستے جسم سے خارج ہوجاتی ہے۔

تو سوال یہ ہے کہ اگر جسمانی توانائی، مسلز یا فضلہ کی شکل اختیار نہیں کرتی تو یہ چربی جاتی کہاں ہے؟
تو اس کا درست جواب ہے کہ یہ چربی کاربن ڈائی آکسائیڈ اور پانی کی شکل اختیار کرتی ہے، انسان کاربن ڈائی آکسائیڈ کو خارج کردیتا ہے جبکہ پانی جسم کے اندر گردش کرکے پیشاب یا پسینے کی شکل میں باہر نکل جاتا ہے۔
تحقیق کے مطابق اگر کوئی فرد 10 کلوگرام چربی کم کرتا ہے تو 8.4 کلو کاربن ڈائی آکسائیڈ کے ذریعے پھیپھڑوں سے باہر آتی ہے جبکہ باقی 1.6 کلوگرام پانی کی شکل اختیار کرلیتا ہے۔
یہ ہر ایک کو حیران کردینے والا امر ہے مگر درحقیقت ہم لگ بھگ جو کچھ بھی کھاتے ہیں وہ پھیپھڑوں کے راستے ہی باہر نکلتا ہے۔
تمام کاربوہائیڈریٹس ہضم ہوجاتے ہیں جبکہ لگ بھگ تمام چربی کاربن ڈائی آکسائیڈ اور پانی کی شکل اختیار کرلیتی ہے، پروٹین کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوتا ہے تاہم اس کا معمولی حصہ یورا اور دیگر ٹھوس مواد کی شکل اختیار کرتا ہے جو کہ پیشاب سے خارج ہوتا ہے۔
غذا میں جو واحد چیز ہمارا معدہ ہضم نہیں کرپاتا اور برقرار رپتا ہے وہ غذائی فائبر ہے۔
اس کے علاوہ جو کچھ لوگ نگلتے ہیں وہ دوران خون اور اعضا میں جذب ہوجاتا ہے اور پھر پھیپھڑوں کے راستے باہر نکل جاتا ہے۔
اور ہاں انسان اوسطاً روزانہ 600 گرام آکسیجن بھی نگلتے ہیں اور یہ توند نکلنے یا کمر پھیلنے کے لیے اہم عنصر ہے۔
اگر آپ دن بھر میں 3.5 کلوگرام غذا اور پانی جسم کا حصہ بناتے ہیں جبکہ 600 گرام آکسیجن نگلتے ہیں، تو 4.1 کلو مواد کو جسم سے باہر نکالنے کی ضرورت ہوتی ہے ورنہ انسان کا وزن بڑھنے لگتا ہے۔
تو موٹاپے اور توند کو خود سے دور رکھنے کا سب سے آسان طریقہ یہ ہے کہ کم کھائیں اور جسم سے زیادہ مقدار میں خارج کریں، جس کے لیے چہل قدمی اچھا انتخاب ہے جو میٹابولک ریٹ 3 گنا بڑھا دیتی ہے۔




Pait ki charbi kahan jati hai

Pait ki charbi kahan jati hai is a very common question that most people who diet ask. It is very mysterious how such a big lump of fat disappears when you reach your fitness goal. Indeed, exercise and diet can help in losing weight by removing you of excess calories. Usually, your body begins the breakdown of fat that is stored in your body through a series of complicated methods. The extra or “burned off” remnants are further on expelled through your lungs, urine and sweat. The whole world is currently obsessed with weight loss, however, very less of us really know what happens to fat that we have eliminated from your body.

What’s interesting is that the most common misconception some people is that all the fat is converted into energy. While others think that the fat turns into muscles or escapes through the colon; this is wrong. So if fat doesn’t escape with energy, muscles or the colon, where does fat go?

Where does fat go after losing weight?
People around the world are worried about excess fat around their waist. They even try various fat killing exercises, nutrients and drinks and sadly, most of them don’t succeed. However, have you ever thought that the fat that people successfully lose, where does it go? This is the question of that almost 98% of doctors fail to answer. However, Australia-based medical experts have now discovered the answer.

The research of the New South Wales reported that the most common misunderstanding in general to doctors is that extra fat breaks down and forms energy. The research said that the problem with this theory is that it does not follow the law of conservation of energy. Researchers say some people think that it replaces the shape of the belly by changing into a form of energy that is impossible, while others feel that it exits the body through the intestines.


So the question is that, if physical fat does not form a shape or waste, then where does this fat go?
The correct answer is that the fat forms carbon dioxide and water. While we breathe out carbon dioxide, water inside the body exits in the form of urine and sweat. According to the research, if a person reduces 10 kg of fat, then 8.4 kg of it comes out through lungs in the form of carbon dioxide. The remaining 1.6 kg is formulated into water and excreted out. This might be a surprise to everyone, but in fact, whatever we eat, it goes out through the lungs or excretes out as urine or stool. All carbohydrates are digestive, whereas all the fat consolidates carbon dioxide and water, it is the same with protein, but it’s the solid materials that are exhausted from the urine.

Apart from this, whatever people swallow absorbs into blood and then exits the lungs. Technically, humans swallow about 600 grams of oxygen daily and it an important element. If you make 3.5 kilograms of food and water in the body, while you also swallow 600 grams of oxygen, then 4.1 kgs needs to excrete out of the body, or it seems to increase the weight of the body further. The easiest way to keep obesity and fat away from you is to eat less and remove more from the body.
By Aqib Shahzad    |    In Tips and Totkay   |    0 Comments    |    5650 Views    |    26 Jul 2018

Comments/Ask Question

Read Blog about Pait Ki Charbi Kaha Jati Hai and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find (Pait Ki Charbi Kaha Jati Hai) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.