"فالسہ” موسمِ گرما میں پیدا ہونے والی تمام بیماریوں کا معالج بھی دوا بھی

فالسہ سبز پھر سرخ اور آخر میں سیاہی مائل ہو جاتا ہے۔ اس کا ذائقہ ترش اور شیریں ہوتا ہے۔ اس کے پھول زرد ہوتے ہیں۔ اس کا مزاج سرد، دوسرے درجے میں اور تر، درجہ اول میں ہوتا ہے اس کی مقدار خوراک تین تولہ سے ایک چھٹانک تک ہوتی ہے ، اس کے بے شمار فوائد ہیں۔

فالسہ کے ان گنت فوائد

فالسہ مقوی قلب ہوتا ہے، دل کی شریانوں کی رکاوٹ کو دورکرتا ہے
فالسہ معدہ کی گرمی دور اور جگر کو طاقت دیتا ہے
یہ پیاس کی شدت کو کم کرتا ہے
پیشاب کی جلن کو ختم کرتا ہے
گرمی کے بخار میں فائدہ پہنچاتا ہے
فالسہ کا شربت گرمی کے توڑ کے لئے بے حد مفید ہے
فالسے کی جڑ کا چھلکا سوزاک اور ذیابیطس میں استعمال کرانا مفید ہوتا ہے۔ ( مقدار خوراک ایک ماشہ ہمراہ پانی صبح و شام) فالسے کے پانی سے غرارے کرنے سے خناق کو فائدہ ہوتا ہے
یہ قے اور دست میں فائدہ پہنچاتا ہے
تپ دق یا ٹی بی میں فالسے کا استعمال بے حد مفید ہوتا ہے
معدے اور سینے کی تیزابیت اور جلن کو دور کرتا ہے
دل کی دھڑکن اور خاص طور پر گھبراہٹ کو دور کرتا ہے
کچا اور کھٹا فالسہ استعمال نہیں کرنا چاہیئے
عورتوں کی مخصوص بیماریوں مثلاً لیکوریا اور سیلان الرحم میں مفید ہوتا ہے
فالسہ خون بناتا بھی ہے اور خون صاف بھی کرتا ہے
جن کا معدہ بوجھل رہتا ہو طبیعت متلاتی ہو اور کھانے کی نالی میں جلن محسوس ہوتی ہو ایک پاؤ فالسہ کا پانی نکال کر تین پاؤ چینی ملا کر گاڑھا شربت تیار کر یں یہی شربت تین بڑے چمچے ہر کھانے کے بعد چاٹنے سے بے حد فائدہ ہوتا ہے
تیز بخارمیں فالسہ کا جوس دینے سے مریض کی تسکین ہوتی ہے
فالسے کا شربت فساد خون کو بے حد مفید ہوتا ہے
فالسے کی جڑ کی چھال دو تولے رات کو بھگو کر صبح اس کا پانی پینے سے سوزاک، سینے کی جلن اور پیشاب کی سوزش دور ہوتی ہے
فالسے کا متواتر استعمال خون اور صفراء کی تیزی کو رفع کرتا ہے
فالسہ سرد مزاج والوں کے لئے نقصان دہ ہوتا ہے، کیونکہ اس کی تاثیر ٹھنڈی ہوتی ہے
سینے اور پھیپھڑوں کو نقصان پہنچاتا ہے ، اس لئے احتیاط سے اسے استعمال کرنا چاہیئے اور ضرورت سے زیادہ نہیں کھانا چاہیئے۔
فالسہ کے شربت میں اگرعرق گلاب ڈال کر پیا جائے تو اس کے فوائد دگنے ہو جاتے ہیں

فالسے کا شربت

فالسے کا شربت بنانے کا طریقہ یہ ہے۔ آدھ سیر پکا ہوا فالسہ، ایک سیر چینی، پہلے فالسے کو پانی میں خوب رگڑ کردھو لیں اب اس کو تھوڑے سے پانی میں گرائنڈ کر لیں اب اس کو کسی چھلنی سے چھان لیں اور چینی ملا کرپکالیں ، جب یہ آمیزہ گاڑھا ہو جائے تو شربت تیار ہے۔ ٹھنڈا کر کے بوتلوں میں بند کر لیں۔، یہ شربت مقوی معدہ و دل ہوتا ہے ، جگر کی حرارت کو تسکین دیتا ہے ، قے، دستوں اور پیاس کو فائدہ دیتا ہے۔

By Afshan    |    In Health and Fitness   |    0 Comments    |    6861 Views    |    16 May 2022

Related Articles

Comments/Ask Question

Read Blog about "فالسہ” موسمِ گرما میں پیدا ہونے والی تمام بیماریوں کا معالج بھی دوا بھی and health & fitness, step by step recipes, Beauty & skin care and other related topics with sample homemade solution. Here is variety of health benefits, home-based natural remedies. Find ("فالسہ” موسمِ گرما میں پیدا ہونے والی تمام بیماریوں کا معالج بھی دوا بھی ) and how to utilize other natural ingredients to cure diseases, easy recipes, and other information related to food from KFoods.