Multani Mitti Ke fayde in Urdu

Multani Mitti Ke fayde in Urdu
Posted By:Saadia 38427 Views
1 Comments May 24, 2020


یہ واحد ماسک ہے جو ہر قسم کی جلد کے لئے مفید ثابت ہوتا ہے ۔ یہ چہرے کے کھلے ہوئے مسامات کو بند کرتا ہے ساتھ ہی چہرے کی جلد کو کس دیتا ہے ۔ اس ماسک کو ہر قسم کے چہرے والی خواتین استعمال کر سکتی ہیں ۔

ملتانی مٹی کا ماسک بنانے کی ترکیب :

کچی ملتانی مٹی ایک انڈے کی سفید ی اور ایک چائے کا چمچ شہد ملا کر اس کا پیسٹ بنالیں اور چہرے پر لگالیں ۔ ماتھے سے لیکر گردن تک لگائیں چہرے اور گردن کا کوئی حصہ خالی نہ رہے کو شش کریں کہ آنکھیں بند ہوں اور چہرہ بالکل سپارٹ رہے جب آپ یہ محسوس کریں کہ پیسٹ خشک ہوگیا ہے اور تناؤ محسوس ہونے لگے تو چہرے کو ٹھنڈے پانی سے دھولیں ۔

خشک جلد کے لئے ماسک :

خشک جلد کے لیے ملتانی مٹی کو پیس کر اس میں تھوڑی سی پسی ہوئی ہلدی ملالیں ساتھ ہی چند قطرے روغن بادام کے ڈال کر پیسٹ بنالیں پیسٹ نرم ہونا ضروری ہے چہرے پر لگا کر پندرہ منٹ کے لئے چھوڑ دیں پھر چہرہ دھولیں اس پیسٹ کے استعمال سے آپ کا چہرہ دن بدن نکھرتا چلاجائے گا۔

چکنی جلد کے لئے ماسک :

ایک پیالی میں انڈہ توڑ کر سفیدی نکال لیں زردی الگ کردیں سفیدی میں چند قطرے لیموں کے عرق کے ملالیں پھر ٹی سپون کی مدد سے اتنا پھینٹیں کہ پیالی میں جھاگ بن جائے اب اسے چہرے پر لگائیں جب خشک ہو جائے تو ٹھنڈے پانی سے چہرہ دھولیں ۔

نارمل جلد کے لئے ماسک :

ایک حصہ خشک پاؤڈر دودھ اور ایک حصہ کچی ملتانی مٹی لے کر اس میں زیتوں کا تیل ملالیں اس طرح نرم انداز کا پیسٹ تیار ہوجائے گا۔ اب اسے چہرے پر لگا کر پندرہ منٹ انتظار کریں پھر اُتار کر منہ دھولیں نارمل جلد کے لئے بہترین ماسک ثابت ہوگا اس سے چہر ہ بشاش اور دمکنے لگتا ہے ۔

In Beauty Tips and Totkay section you can check Multani Mitti Ke fayde in Urdu in most easiest way. Find Multani Mitti Ke fayde in Urdu in urdu totkay only at kfoods. At this page you can find Multani Mitti Ke fayde in Urdu totka in details also check the relevant totkay in Urdu of Multani Mitti Ke fayde in Urdu.

Relevant Totkay

Reviews

Excellent base tips for all kinds of Multani mitti. It adapted really well so several substitutions: I used daily basis multani mitti, and My face is shining.... Thanks

Feb 24, 2020 amima rehan

Comments