Fried cheesy sole Recipe in Urdu

Fried cheesy sole
Recommended By Chef 0:30 To Prep
2 Servings 0:10 To Cook
Tips About Recipe 12104 Views
1 Comments

فرائیڈ چیزی سول

اجزاء:
سول فش فلے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 4عدد
نمک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 2/1چائے کا چمچہ
لیموں کا رس۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک کھانے کا چمچہ
وسٹر شائر سوس۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک کھانے کا چمچہ
بیٹر کے لئے:
میدہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 3کھانے کے چمچے
کارن فلور۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 2کھانے کے چمچے
انڈے کی زردی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک عدد
تیل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک کھانے کا چمچہ
نمک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 4/1چائے کا چمچہ
سفیدمرچ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 4/1چائے کا چمچہ
کدوکش چیڈر چیز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 2کھانے کے چمچے
بیٹربنانے کے لئے 3کھانے کے چمچے میدہ،2کھانے کے چمچے کارن فلور، 4/1 چائے کا چمچہ بیکنگ پاﺅڈر، ایک عددانڈے کی زردی، ایک کھانے کا چمچہ تیل، 4/1 چائے کا چمچہ نمک، 4/1 چائے کا چمچہ سفید مرچ،2کھانے کے چمچے کدو کش چیڈر چیز اور حسبِ ضرورت ٹھنڈا پانی کو ملا کر بیٹر بنالیں۔
اب 4عدد سول فش فلے کو2/1 چائے کا چمچہ نمک، 2/1چائے کا چمچہ سفید مرچ،ایک کھانے کا چمچہ لیموں کا رس اور ایک کھانے کا چمچہ وسٹر شائر سوس سے میری نیٹ کرکے30منٹ کے لئے رکھ دیں۔
پھر فش فلے کوبیٹر میں ڈپ کرکے فرائنگ پین میں شیلو فرائی کرلیں ، یہاں تک کہ وہ خستہ ہوجائیں۔
آخر میں اسے فرائی کے ساتھ سرو رکرلیں۔

Shireen Anwar , Posted By: kiran,

Find out the Fried cheesy sole Recipe in Urdu this is the most easy and traditional cooking recipe in all the Sea Foods. Fried cheesy sole is very famous in desi people. At KFoods you can find Fried cheesy sole and all the urdu recipes in a very easiest way.

Fried cheesy sole

Fried cheesy sole in Urdu is an easy and traditional cooking recipe to prepare at home. It provides you an awesome taste of Sea Foods by Shireen Anwar.

مزید فش اور سی فوڈز ریسیپیز

Reviews & Comments (1)

Hey kfoods chef, can you teach me Fried cheesy sole recipe in step by step? I am a bit slow learner therefore i go with clearer and explained deeper recipes. Have been cooking sea food recipes for long time but i always look for step by step recipes.

Feb 23, 2017 Nada Muzaffarabad

Leave Comment