Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika

Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika
Posted By:Urooj 6072 Views
0 Comments Jan 11, 2021


اکثر خواتین کو رات کے وقت ٹانگوں اور پنڈلیوں میں شدید درد کیوں ہوتا ہے؟

اکثر خواتین دن بھر کی سرگرمیوں کے بعد رات کو جب سورہی ہوتی ہیں یا نیند میں ہوتی ہیں تو اچانک ٹانگوں، پنڈلیوں اور رانوں میں درد کی شکایت ہونے لگتی ہے۔ بعض اوقات پیروں کے نیچے چھبن اور تکلیف ہوتی ہے۔
اس مسئلے کو طب میں چارلی ہارس کہا جاتا ہے۔ ماہرین کے مطابق یہ مسئلہ اس لئے ہوتا ہے کیونکہ دن بھر یا تو بہت دیر تک ایک ہی طرف ہو کر بیٹھے رہنے سے یا پھر کسی ورزش کے باعث ان کے پٹھے یا مسلز اکڑاہٹ کا شکار ہونے لگتے ہیں۔ جس کا احساس رات کے اس پہر ہوتا ہے کہ جس وقت جسم سکون کی حالت میں ہوتا ہے۔ ماہرین کا ماننا ہے کہ مسلز کی یہ اکڑن ڈی ہائیڈریشن یا بہت زیادہ استعمال کی وجہ سے بھی ہوتی ہے۔
دیگر عناصر میں خون کی ناقص گردش، مخصوص ادویات کا استعمال اور سست طرز زندگی بھی ہوسکتا ہے۔ اس سے کیسے راحت حاصل کی جائے؟ وہ لوگ جو دن بھر سست روی سے کام لیتے ہیں انھیں چاہئے کہ وہ ہر تھوڑی دیر بعد لازمی اپنے جسم کو حرکت میں لائیں۔ چلیں، پھریں، دوڑیں۔ اور جو افراد ایک ہی جگہ بیٹھ کر کام کرنے کے عادی ہیں ان کو چاہئے کہ وہ پاؤں زیادہ دیر تک نہ لٹکائیں ، ساتھ ہی جسم کو دوسری سمت میں حرکت دیتے رہیں اس سے پٹھے اکڑیں گے نہیں اور نا ہی آپ کے خون کی گردش میں کوئی روک تھام ہوگی۔
ڈاکٹروں کے مطابق رات کو سونے سے قبل اپنے پاؤں کے نیچے سرسوں یا زیتون کا تیل لگا کر مالش کرکے سونے سے بھی آپ کو ٹانگوں اور پنڈلیوں کے درد میں آرام مل سکتا ہے۔
نوٹ : یہ ایک عام معلومات ہے مزید معلومات کے لیے ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

In Health Tips and Totkay section you can check Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika in most easiest way. Find Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika in urdu totkay only at kfoods. At this page you can find Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika totka in details also check the relevant totkay in Urdu of Pathon Ke Dard Ko Kam Karne Ka Tarika.

Relevant Totkay

Reviews

Comments

DISCLAIMER: The Health Videos and content information are provided on this site for informational purposes only and is not intend to any Medical Advice, Counseling, Diagnosis or Treatment. Please contact to your health advisor for any your health concern.